کشمیر کے متعدد جنگلات میں بھیانک آگ، سبز سونا راکھ میں تبدیل

0
70

سری نگر ، 31مارچ (یو ا ین آئی) وادی کشمیر میں جنوب سے لیکر شمال تک متعدد جنگلات بھیانک آگ کی لپیٹ میں آگئے ہیں۔ مسلسل خشک موسم کی وجہ سے پھیلنے والی اس آگ کے نتیجے میں سبز سونا راکھ میں تبدیل ہورہا ہے۔ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کا کہنا ہے کہ محکمہ جنگلات کے اہلکار اور دیگر رضاکار آگ کی شعلوں کو بجھانے کی انتھک کوششیں کررہے ہیں۔ انہوں نے مائیکرو بلاگنگ کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ’محکمہ جنگلات کے اہلکار اور رضاکار بانڈی پورہ، کنگن، اننت ناگ اور دیگر متاثرہ علاقوں میں جنگلات میں لگنے والی آگ کو بجھانے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ وہ اس پر قابو پانے میں جزوی طور پر کامیاب ہوئے ہیں۔ صورتحال کو قابو میں لانے کے لئے تمام محکمے ہائی الرٹ پر ہیں‘۔ شمالی کشمیر سے موصولہ اطلاعات کے مطابق کپواڑہ، بانڈی پورہ اور بارہمولہ اضلاع میں قریب آدھ درجن کمپارٹمنٹس آگ کی لپیٹ میں ہیں۔ اس بھیانک آگ کی وجہ سے سرسبز درختوں کی ایک بڑی تعداد راکھ میں تبدیل ہوگئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق انتظامیہ نے آگ کو بجھانے کے لئے جنگلوں کے نذدیک رہائش پذیر لوگوں سے مدد طلب کرلی ہے۔ فارسٹ نارتھ ڈویژن کے کنزرویٹر عرفان رسول وانی نے یو این آئی کو بتایا کہ چترنار ڈویژن کے کمپارٹمنٹ نمبر 106، 109 اور 110 میں لگی آگ پر قابو پایا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ جنگلات میں آگ کی بنیادی وجہ طویل خشک سالی اور موسم سرما میں کم برف باری کا ہونا ہے۔ انہوں نے بتایا ’جنگلات میں موجود گاس بہت زیادہ سوکھی ہے اور یہ آگ کے پھیلنے میں تیل کا کام کررہی ہے‘۔ مسٹر عرفان نے بتایا کہ ضلع انتظامیہ نے مقامی لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ محکمہ جنگلات اور وائلڈ لائف کو جنگلات میں لگنے والی آگ کو بجھانے میں مدد کریں۔ ذرائع نے بتایا کہ لولاب میں کمپارٹمنٹ نمبر 35، کامراج ڈویژن کنڈی کے کمپارٹمنٹ نمبر 26 اور اپر سوپور کے کمپارٹمنٹ نمبر 23 میں بھی آگ نمودار ہوئی ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق شمالی ضلع بارہمولہ کے ٹنگمرگ ڈویژن کے نوروز بابا جنگلات میں بھی ایک کمپارٹمنٹ آگ کی لپیٹ میں آگیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق اننت ناگ اور کنگن کے جنگلات بھی گذشتہ چند روز سے آگ کی لپیٹ میں ہیں۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here